INTERMEDIATE EXAMS IN KARACHI TO BEGIN FROM JULY 26: BIEK CHAIRMAN


 Intermediate exams is going to be held on 26th July. BIEK Chairman

انٹرمیڈیٹ امتحانات شروع ہونے سے قبل ایک صدر کو مخاطب کرتے ہوئے چیئرمین نے کہا کہ پچھلے سال وہ وبائی امراض کی وجہ سے کاغذات نہیں تھم سکتے ہیں ، تاہم اس بار یہ عمل شیڈول کے مطابق ہوگا۔

 انہوں نے کہا ، "یہ کاغذات 26 جولائی سے شروع ہوں گے اور 112،000 طلباء اس میں حصہ لیں گے۔" انہوں نے مزید کہا کہ پری انجینئرنگ اور پری میڈیکل طلباء امتحانات میں شرکت کریں گے۔

 BIEK چیئرمین نے مزید کہا کہ 66 امتحانی مراکز کو حساس قرار دیا گیا ہے اور کاغذات کے دوران طلباء کو دھوکہ دہی اور دیگر غیر قانونی طریقوں سے ملوث ہونے سے باز رکھنے کے لئے خصوصی اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔

 یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ کراچی میں میٹرک کے امتحانات میں بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن کراچی (بی ایس ای کے) کی جانب سے بدانتظامی اور دھوکہ دہی کی شکایات کی وجہ سے مقابلہ کیا گیا تھا۔

 حتی کہ امتحانی مراکز پر کاغذات بروقت نہیں مل سکے جس کی وجہ سے ایسے طلباء کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے جنہیں گھنٹوں انتظار کرنا پڑتا تھا یا کسی معاملے میں کاغذ میں حاضر ہوئے بغیر ہی امتحانی مرکز چھوڑنا پڑتا تھا۔

 بورڈ نے بعد میں بی ایس ای کے حکام کو بدنام کرنے کے لئے سنٹر کنٹرول افسران کو اس پورے واقعے کے پیچھے کرنے کا الزام لگایا۔

 بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن کراچی (بی ایس ای کے) سید سید شرف علی شاہ نے میڈیا کو بتایا کہ تعلیمی بورڈ کو بدنام کرنے کی یہ سازش ہے۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ 38 سنٹر کنٹرول افسران مقررہ وقت پر امتحانی مراکز پر نہیں پہنچے تھے۔

 بی ایس ای کے چیئرمین نے کہا کہ سرکاری اسکولوں سے وابستہ سی سی او کو معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ، جبکہ نجی اسکولوں کے افسران کو مستقبل میں کسی بھی تفویض میں شامل نہیں کیا جائے گا۔